ڈیلٹا ویرینٹ کیخلاف کون سی ویکسین انتہائی مؤثر ہے؟ ماہرین کی تحقیق

برطانوی ماہرین نے اپنی تحقیق میں دعویٰ کیا ہے کہ فائزر ویکسین کی دو خوراکیں ڈیلٹا ویرینٹ کیخلاف88 فیصد مؤثرہیں، مذکورہ ویکسین کو کورونا کی ابتدائی اقسام کے خلاف نتیجہ خیز اور کارگر قرار دیا گیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق ایک برطانوی تحقیق میں کہا گیا ہے کہ کورونا وائرس کے سدباب کیلئے تیارکی گئی فائزر ویکسین کی دو خوراکیں ڈیلٹا ویرینٹ کے خلاف 88 فیصد مؤثر رہیں۔برطانوی تحقیق میں مزید کہا گیا ہے کہ کورونا وائرس کی ایسٹرازینیکا ویکسین کی دو خوراکیں ڈیلٹا ویرینٹ کے خلاف 60 فیصد مؤثر رہیں۔

برطانوی تحقیق میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ ڈیلٹا ویرینٹ کے خلاف فائزر ویکسین کی ایک خوراک 36 فیصد جبکہ ایسٹرازینیکا کی ایک خوراک 30فیصد مؤثر رہی۔دوسری جانب چلی نے روسی کورونا وائرس کی ویکسین اسپوٹنک فائیو کے ہنگامی استعمال کی منظوری دے دی ہے

دوسری جانبسری لنکن یونیورسٹی کے ماہرین نے چین کی تیار کردہ سائنو فارم ویکسین کے کورونا وائرس کی بھارتی قسم ڈیلٹا کے خلاف انتہائی مؤثر ثابت ہونے کا دعویٰ کیا ہے۔

چینی اور خلیجی میڈیا رپورٹس کے مطابق سری جے وردنے پورہ یونیورسٹی کے ماہرین نے تحقیق میں دعویٰ کیا ہے کہ 95 فیصد افراد جنہیں سائنوفارم ویکسین کی دونوں خوراکیں لگ چکی ہیں ان میں اتنی ہی اینٹی باڈیز پیدا ہو تی ہیں جتنی کورونا وائرس کا شکار کسی مریض میں ہوتی ہیں۔

تحقیق کے مطابق سائنوفارم ویکسین لگوانے والے 20 سے 40 برس کے افراد میں 98 فیصد جب کہ 60 سال سے زائد عمر کے افراد میں 93 فیصد اینٹی باڈیز پیدا ہوئیں۔

شئیر کریں

Leave a Comment