بھارتی وزیر خارجہ کے بیان کو عالمی برادری اور فیٹف کے نوٹس میں لایا جائیگا: پاکستان

ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ بھارتی وزیر خارجہ جے شنکر کا بیان فنانشنل ایکشن ٹاسک فورس (فیٹف) میں پاکستان مخالف منفی کردار  پر  ہمارے دیرینہ مؤقف کی تائید ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ بھارتی وزیر خارجہ جے شنکر نے بھارت کی اصل حقیقت دکھائی اور پاکستان کے خلاف فیٹف معاملہ سیاسی بنانے کا اعتراف کیا، پاکستان ہمیشہ سے دنیا کو بھارت کی جانب سے ایف اے ٹی ایف معاملے کو سیاسی بنانے سے آگاہ کر  رہا ہے اور بھارتی وزیر خارجہ کے بیان نے فیٹف میں پاکستان مخالف منفی کردار  پر  ہمارے دیرینہ مؤقف کی تائید کی ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق پاکستان فیٹف کے ایکشن پلان پر عمل کرنے میں سنجیدگی سے اقدامات کر  رہا ہے لیکن بھارت نے شرمناک انداز سے پاکستان کی پیشرفت پر شکوک و شبہات پیدا کرنے کی کوشش کی، پاکستان بھارت کی جانب سے حالیہ اعتراف کو  بھی بین الاقوامی برادری اور فیٹف کے نوٹس میں لائے گا، پاکستان مناسب کارروائی کے لیے فیٹف کے صدر سے رابطہ کرنے کے حوالے سے بھی غور کر رہا ہے۔

دفتر خارجہ کے ترجمان کا کہنا ہے کہ بھارت کے فیٹف کے مشترکہ گروپ کے کو چیئر ہونے کے حوالے سے بھی سوالات پیدا ہو گئے ہیں، ہم فیٹف سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ ان معاملات کو دیکھے۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق فیٹف نے انسداد منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کی فنانسنگ کے حوالے سے پاکستان کے ٹھوس اقدامات کو ہمیشہ سراہا، ہم بین الاقوامی ساتھیوں کی معاونت کے ساتھ کام کی اس رفتار کو برقرار رکھنے کے لیے پرعزم ہیں، پاکستان پر دباؤ ڈالنے کا بھارتی شوق کبھی پورا ہوا اور نا ہی کبھی پورا ہو گا۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز بھارتی وزیر خارجہ جے شنکر نے ایک تقریب خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ پاکستان کو فیٹف کی گرے لسٹ میں رکھنا مودی حکومت نے یقینی بنایا، بھارتی کوششوں کے باعث ہی پاکستان گرے لسٹ میں ہے۔

شئیر کریں

Leave a Comment